افسانے

ہنسنا منع ہے ۔۔۔۔۔ صرف مسکرائیے ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

آئین کی رو سے اس دنیا میں انواع و اقسام کے مرد و خواتین پائے جاتے ہیں آئیے ان میں سے چند کا یہاں تذکرہ کرتے ہیں ۔ بنیادی طور پر مرد تین طرح کے ہوتے ہیں اور یہی تین

ڈرامہ ۔ وہ میرا دل تھا ۔۔۔ تبصرہ : اسماء طارق ۔ گجرات

ڈرامہ وہ میرا دل تھا ایک لو سٹوری ہے بےشک اس میں باقی کہانیوں کے طرح سسپنس اور تھرل نہیں ہے مگر اس کہانی میں ایک اہم معاشرتی پہلو کی طرف بھی توجہ دلائی گئی ہے کہ کیسے بچے غلط

حرامزادہ ۔۔۔ تحریر : محمد نواز ۔۔۔۔۔ کمالیہ

جی ٹی روڑ پر واقع ہوٹل اب ڈرائیور ہوٹل کے نام سے مشہور ہو گیا تھا ۔لاہور کو جانے اور آنے والی موٹر گاڑیاں ،بسیں اور زیادہ تر ٹرک یہاں آ کر رکتے ،آرام کرتے ،کھانا کھاتے اور اپنی اپنی

کتابیں پڑھنے کے شوقین ۔۔۔ تحریر : فرح ناز

ہم لوگ جو کتابیں پڑھنے کے شوقین ہوتے ہیں نہ ہم ایک ساتھ بہت سی زندگیاں جیتے ہیں، ہم داستانیں سننے اور پڑھنے والے کبھی عمرجہانگیر کے مرنے پر روتے ہیں، تو کبھی امرحہ کے ساتھ مانچسٹر کی سڑکوں پر

عزت کی چھوٹی چادر ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

ماں یہ عزت کی چادر چھوٹی کیوں ہوتی ہے مریم نے ماں سے پوچھا ،ماں نے بیزار ہو کر کہا کہ مجھے نہیں پتا بڑوں سے ایسے ہی سنا ہے ۔ جب سے اس نے ماسی رحمت کو یہ کہتے

گم شدہ جنت ۔۔۔ تحریر : عالیہ ذوالقرنین ۔ لاہور

دعا کافی دیر سے ماتھے پر سلوٹیں ڈالے کمرے میں ادھر سے ادھر ٹہل رہی تھی ۔ پریشانی اور تفکر چہرے سے عیاں تھا ۔ کھڑی رات کے دو بج کر دس منٹ بجا رہی تھی ۔ اضطرابی کیفیت میں

مکافات عمل ۔۔۔ تحریر : ایم پی خان

ویل چیئر پر بیٹھے ہوئے دلاور کے قیافہ سے گہری سنجیدگی اورمتانت ظاہرہو رہی تھی ۔ بڑا گول چہرہ، نیم سفید باریک ڈاڑھی،بڑا تندرست جسم،موٹی موٹی کلائیاں، رانوں پر سفید چادر پڑی ہوئی تھی، جس میں دونوں ٹانگیں انگلیوں تک

محبت جرم ہے ۔۔۔ تحریر : اختر مرزا

کیا محبت جرم ہے؟ کیا محبت بری ہے؟ نہیں اگر بری نہیں ہے تو اچھی بھی نہیں۔ اگر اچھی ہے تو میرے لیے تو نہیں۔ اگر میں مان بھی لوں کہ میں اس سے محبت کرتا ہوں تو اظہار کیسے

روداد زیست (غیر مطبوعہ ناول) ۔۔۔ تحریر : صفیہ انور صفی

سفید پوشاک میں لپٹارفیع ماسلف کو بھلائے ماہ طلعت لگ رہا تھا۔افتاب سحر نے بہن کو روتے ہوئے کہا۔۔۔ ”فائزہ بہن۔۔۔۔۔ربااللرباب کی مرضی کے اگے ہم کوئی مبارزت نہیں کر سکتے۔۔۔جس ذات نے پیدا کیا۔۔۔۔۔ اسی کے پاس ہمیں لوٹ

پھوار ۔۔۔ تحریر : شگفتہ یاسمین

امّی آپ نے مجھے کبھی کہیں بھی جانے کی اجازت نہیں دی۔لیکن اب میں ایگزیم سے فارغ ہوئی ہو ں۔۔۔۔۔۔بس مجھے خالہ لوگوں کے گھر جا نا ہے۔ رابیل نے بی ایس سی کے امتحان سے فارغ ہوتے ہی گھر