تبصرہ کتب

وُجُود کیا حَباب کا ‘‘۔۔۔ تبصرہ نگار: مجید احمد جائی’’

’’وجو د کیا حباب کا ‘‘گزشتہ چند روز میرے زیر مطالعہ رہی ہے ۔یہ شاعری مجموعہ ہے ،جس کے مصنف مُشبر حسین سید صاحب ہیں ۔ابتداء اللہ تعالیٰ کے نام سے کرتے ہیں اور آقا دو جہاں ﷺ پر دورو

۔’’گاڑی جا چکی ‘‘۔۔۔ تبصرہ نگار : مجید احمد جائی

’گاڑی جا چکی ‘‘ بظاہر سادہ اور آسان جملہ ہے لیکن اپنے اندر تجسس لیے ہوا ہے ۔اس میں جو درد ،کرب ،آہیں ،سسکیاں ،آنسو ،تڑپ ،زخم ہیں وہ اس کو پڑھے بغیر آشکار نہیں ہوتے ۔’’گاڑی جا چکی ‘‘صرف

لوٹ آتے تو اچھا تھا‘‘ ۔۔۔ تبصرہ نگار : مجید احمد جائی’’

لوٹ آتے تو اچھا تھا ،یہ فریاد ی جملہ نہیں کتاب کا نام ہے ۔یہ کتاب شاعری مجموعہ ہے جس کی مصنفہ ’’ھما خان ‘‘ہیں۔کتاب کا سرورق بہت دیدہ زیب ہے ۔بیک فلاپ پہ مایہ ناز شاعر ارشد ملک کے

کمرہ نمبر 109‘‘۔۔۔تبصرہ نگار : مجید احمد جائی ’’

کمرہ نمبر109اپنے اندر بہت سے طوفان لئے ہوئے ہے ۔یونہی کمرہ نمبر109کا لفظ پڑھتے ہیں تو فوراذہن پوری دُنیا کا نقشہ اپنے اندر لے آتا ہے اور پھر متلاشی نظروں کو ،کسی ہسپتال ،جیل کی بیرک اور یا پھر ہوسٹل

شگوفہء سحر ۔۔۔ تبصرہ : سباس گل

کتاب: شگوفہء سحر مصنف: ابنِ ریاض تبصرہ: سباس گل اہتمام : آر ا یس مصطفیٰ ابنِ ریاض کی یہ پہلی کتاب ان کے کالموں اور انشائیوں کا مجموعہ ہے۔ اس کتاب کا پیش لفظ لکھنے کا اعزاز بھی ہمیں حاصل

کتاب : کربِ نارسائی (شعری مجموعہ) شاعرہ : شہناز شازی

تبصرہ : رفعت خان (خانپور)۔۔ اک اور کلی چٹکی ،اک اور کھِلا غنچہ واہ ! کربِ نارسائی ، شہناز شازی کی بہترین تخلیقی کاوش پر نگاہ پڑتے ہی لبوں سے ادا ہوئی پہلی خوبصورت سطر اے کربِ نارسائی کی شدت

ملتان کی دھرتی کے مقدر کا ستارہ ۔۔۔۔ تحریر : سید مبارک علی شمسی

شفق کہوں ،شفیق کہوں کہ تجھے کیا کہوں اے مجید القاب کے پیچ و خم میں حیران ہے زبان میری مدنیۃالاولیاء ملتان زمانہ قدیم سے ہی علم و ادبّ اور روحانیت کا مرکز رہا ہے ۔اس کی تاریخ اُتنی ہی

عہد راحیل شریف، پاک فوج کے کارہائے نمایاں۔۔۔تحریر:اختر سردار چودھری

پاک فوج کی جرات ودلیری،عزم وحوصلے، ایمان ویقین ، ایثار وقربانی کی نظیر تاریخ میں نہیں ملتی ،وطن عزیز کی سرحدوں کا دفاع ہو یا قدرتی آفات ، امن و امان کا مسلہ ہو یا دہشت گردی کے واقعات تو

ٴٴواقعات لاہورٴٴ لاجواب تاریخی کتاب………تحریر: وقاص ظہیر

بطور انسان ہم جس معاشرے میں پروان چڑھتے ہیں ہمیں ہر دور میں نئی سے نئی معلومات کی جستجو اور تجسس رہا ہے  ، گو کہ اللہ تعالیٰ نے اپنے پیغام رساں انبیا کرام علیہ السلام کے ذریعے دنیا و

میری آنکھوں میں کتنا پانی ہے…….اختر سردار چودھری

دوسال قبل سوشل میڈیا پر جبارواصف سے اِن کے دکھ درد بھرے،غموں سے لپٹے اشعار پڑھ کر دوستی ہوئی ،اسی دوران میں نے اجازت لے کر ان کی بہت ساری شاعری کو اپنے کالموں کا حصہ بھی بنایا ۔ایک دن