کشمیر

ایٹمی جنگ کی دھمکیاں امن نہیں کولڈوار ہیں ۔۔۔ تحریر : سید سردار احمد پیرزادہ

انسانوں کی طرح جنگوں کی بھی بہت سی اقسام ہیں۔ انہی میں سے ایک ”کولڈوار“ ہے جس کا ذکر سوویت یونین کے خاتمے سے پہلے بہت عام تھا۔ جونہی سوویت یونین ڈوبا، لوگوں نے سمجھ لیا کہ کولڈوار کا زمانہ

عالمی ادارے بے سہارہ کشمیریوں کی مدد کریں ۔ اکرام الدین

کشمیر میں انڈین آرمی کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں افسوس ناک ہیں۔ چیف گلوبل میڈیا یورپ یورپ ( ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ۔ ایڈیٹر ہماری بات پاکستان ) بین الاقوامی اعلیٰ صحافتی تنظیم جذبہ اتحاد یونین آف جرنلسٹ

کشمیر کے لیے نیت اخلاص چاہیے ۔۔۔ تحریر : مسز جمشید خاکوانی

گورنر نجم الدین ایوب کافی عمر ہونے تک شادی سے انکار کرتے رہے ایک دن اس کے بھائی اسد الدین شیر کوہ نے اس سے کہا بھائی تم شادی کیوں نہیں کرتے؟نجم الدین نے جواب دیا،میں کسی کو اپنے قابل

ایٹم بم ایک اشارہ ہی تو ہے ۔۔۔ تحریر : سید سردار احمد پیرزادہ

بچ جانے والے پاکستان کو محفوظ رکھنے کے لیے ایٹم بم بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ ذوالفقار علی بھٹو نے 20 جنوری 1972ء کو ملتان میں پاکستان کے چیدہ چیدہ سائنس دانوں کا اجلاس بلایا اور اُن کی توجہ اِس

لہو کے پیاسے مودی اور داخلی دشمنوں کی گوشمالی ضروری ہے ۔۔۔ تحریر : مقصود احمد سندھو ۔ چیچہ وطنی

انسانی خون کی پیاسی،مسلم دشمن اور اقلیتوں پر ظلم وبربریت برپاء کرنے کی شوقین ہندوستانی حکومت نے اپنے مکروہ عزائم کی تکمیل اور اپنی خون آشام فطرت کی تسکین کے لئے کشمیر میں ایک بار پھر نہتے،مجبوربے بس اورلاچار لوگوں

بھارتی انتہاء پسندی کا مُنہّ توڑ جواب ۔۔۔ تحریر : ثناء خان تنولی‎

بہت افسوس ہوا ،بہت ہی زیادہ ! ۔ یوٹیوب پر موجودہ کچھ ویڈیوز پاکستانیوں اور بھارت واسیوں کی جانب سے جو اَپ لوڈ کی گئیں ملک کے موجودہ حالات کے بارے میں جس سے آپ سب بھی واقف ھیں۔ تو

کشمیر پلوامہ میں خود کش کار بم حملہ ۔۔۔۔ تحریر : میر افسر امان

بھارتی مقبوضہ کشمیر میں پلوامہ میں جموں و کشمیر شاہرہ پر جاتے ہوئے فوجی کانوائے پر خود کش کار بم حملہ ہوا ۔ اس حملہ میں ۴۰ ؍بھارتی فوجی ہلاک ہوئے اور سیکڑوں زخمی ہوئے۔دھماکہ اتنا زرو دار تھا کہ

جنت نظیر وادی میں خون کی ہولی ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

قصہ کچھ یوں ہے کہ جنت نظیر وادی ریاست جموں و کشمیر ڈوگرہ راج کے سائے میں پروان چڑھتی ہے جہاں مہاراجہ رنجیت سنگھ ڈوگراوں کے خلاف جنگ کرکے جموں کو فتح کرتا ہے اور اس کی مدد ڈوگرہ راجہ

سفاک بھیڑئیے اور باہمت کشمیری ۔۔۔ تحریر : مقصود احمد سندھو ۔ چیچہ وطنی

خوشبو دارپھولوں، خوبصورت وادیوں،دلفریب قدرتی نظاروں ، نغمہ سراء آبشاروں اور چناروں کی جنت نظیر وادی کا چپہ چپہ آج اپنے ہی باشندوں کے خون سے سرخ ہو چکا ہے مقبوضہ وادی میں بھارتی سفاک بھیڑیوں کی درندگی اپنے نقطۂ

تحریک آزادی جموں کشمیر کے تحت آل پارٹیز کشمیر کانفرنس منعقد

ٖفیصل آباد ( ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ۔ ایڈیٹر ہماری بات پاکستان ) تحریک آزادی جموں کشمیر کے تحت آل پارٹیز کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سیاسی و مذہبی رہنماؤں نے کہا ہے کہ پاکستانی قوم کل بھی کشمیریوں کے ساتھ

شہ رگ پاکستان ۔۔۔ تحریر : حافظ امیر حمزہ ۔ سانگلہ ہل

مقبوضہ کشمیر جو کہ وطن عزیز “اسلامی جمہوریہ پاکستان” کی شہ رگ ہے یہ ٖٖٖفردوس بریں، دلنشین کشمیر کی گل پوش وادیاں،روئی کے گالوں سے ڈھکی چھپی چٹانیں،ہنستے، مسکراتے، لہلہلاتے مرغزار، مہکتے،چمکتے اوردمکتے ہوئے سبزہ زار،سازبجاتی، گیت گنگناتی ندیاں اوررنگ

کشمیر کب تک؟۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

قانونِ فطرت ہے کہ عروج ایک خاص حد تک جا کر زوال میں تبدیل ہو جاتا ہے۔اور زوال بالآخر عروج کی طرف گامزن دکھائی دیتا ہے۔عروج و زوال کی داستان تاریخِ مسلم میں کچھ نئی نہیں ہے۔عرب کے لق و

خاموشی کب تک؟۔۔۔ تحریر : محمد ذیشان اکبر

کشمیر ایک ایسی وادی کا نام ہے کہ جسے دنیائے عالم نے جنت کا نام دیا ہے۔لیکن قدرت کا کرنا یوں ہوا کہ یہ جنت آج کا کافروں کے ہاتھوں دوزخ بنی ہوئی ہے۔ اور ہم کچھ نہیں کرسکتے۔بات صرف

مقبوضہ کشمیر بھارت کے ہاتھ سے نکل رہا ہے ۔۔۔ تحریر :محمد اشفاق راجا

سابق بھارتی وزیر اور کانگریس کے سینئر رہنما پی چدمبرم نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر بھارت کے ہاتھوں سے نکلنے کے قریب پہنچ چکا ہے کیونکہ مرکزی حکومت نے وہاں بد امنی کو دبانے کے لئے طاقت کا اندھا

حافظ محمد سعید کی گرفتاری اور کشمیر کی تحریک آزادی ۔۔۔ تحریر : انور عباس انور

نائن الیون کے واقعہ نے دنیا کی واحد سپر طاقت کی چولیں ہلا کر رکھ دیں ، قطہ نظر اس بات کے کہ یہ واقعہ مسلم ممالک کی سرکوبی کے لیے امریکہ کی اپنی کارستانی تھا یا واقعی اس میں

کشمیر سے اظہارِ یکجہتی کا دن ۵ فروری ۔۔۔ تحریر : ڈاکٹر رئیس صمدانی

  یوم یکجہتی کشمیر ہر سال ۵ فروری کو منایا جاتا ہے جس کا مقصد بھارتی قبضے میں مقبوضہ کشمیرکے کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی ، ہمدردی اور انہیں یہ باور کرانا ہے کہ وہ اپنے مقاصد کے حصول میں تنہا

کشمیر آزادی کے دہانے پر ۔۔۔ تحریر : عقیل خان

  کشمیر پاکستان کاحصہ تھا اور حصہ ہے مگر ہندوستان کی شاطرانہ چال اور انگریزوں کی ساز باز نے آج تک کشمیر کو غلامی کی زنجیروں میں جکڑ رکھا ہے۔کشمیر کی غلامی کی حقیقت سے پوری دنیا واقف ہے مگر

یوم یکجہتی کشمیر کا تقاضہ ۔۔۔ تحریر : ملک محمد سلمان

  کشمیر پاکستان کے شمال مشرق میں واقع ہے۔ کشمیر کی سرحدیں ایک طرف پاکستان جبکہ دوسری طرف چین و بھارت کے ساتھ ملتی ہیں۔ بانی قوم حضرت قائد اعظم نے کشمیر کی جغرافیائی صورتحال کی روشنی میں کشمیر کو

قدرت کے حسین خطے کا نام ،کشمیر۔۔۔ تحریر : مولانا محمد صدیق مدنی

بھارتی وزیر دفاع کہنا ہے کہ پاکستان کو اپنے زیر انتظام کشمیر سے قبضہ ختم کرنا ہو گا ،اس طرح کی ہرزہ سرائی پہلے بھی بھارت کی طرف سے ہوتی رہتی ہے لیکن ہم پھر بھی پاک بھارت دوستی کا

پانچ فروری ہر سال آتا ہے !۔۔۔تحریر : عنایت کابلگرامی

  کچھ لوگ کہتے ہیں کہ جنت اور اس میں موجود انعامات کو سمجھانے کے لئے اللہ تعالیٰ نے اس دنیا میں کچھ ایسی بھی نعمتیں پیدا کی ہیں جنہیں دیکھ کر،سن کر،سونگھ کراورچکھ کرجنت اور اس میں موجود نعمتوں