وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی کمالیہ آمد

کمالیہ ( ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ۔ ایڈیٹر ہماری بات پاکستان ) وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کمالیہ میں گورنمنٹ ہائی سکول نمبر 1 جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ آج مجھے پھر آپ سے مل کر بہت خوشی ہو رہی ہے۔ پہلے بھی میں نے یہیں جلسہ کیا تھا۔ آج مجھے جوشیلے نوجوانوں اور بھائیوں سے مل کر بہت خوشی ہورہی ہے۔ میں آپ کے جذبے کو سلام کرتا ہوں۔ پانچ سالوں میں میاں نوازشریف کی قیاد ت میں ملک اور صوبے میں جو ترقیاتی کام ہوئے ہیں، پاکستان کی تاریخ میں اتنے شاندار ترقیاتی عوامی کام پہلے کبھی نہیں ہوئے۔ 2013 میں جب مسلم لیگ (ن) کی حکومت کی آئی تھی تو بجلی جاتی تھی اور واپس نہیں آتی تھی، آج ایسی کوئی صورتحال نہیں ہے۔ اب لوڈ شیڈنگ کا مکمل خاتمہ ہو جائیگا اور پھر کبھی لوڈ شیڈنگ کے مسئلے سے دوچار نہیں ہونگے۔ ہم نے آکر سب سے پہلے انرجی بحران پر قابو پایا،ساہیوال، بھکی، جھنگ، بلوکی، حویلی بہادر شاہ، سمیت بڑے بڑے منصوبے چین کے تعاون سے پانچ ہزار منصوبے لگائے۔ پورٹ قاسم میں 1320  میگا واٹ کا منصوبہ لگایا جارہا ہے۔ 70 سال میں کسی حکومت نے اس طرح عوام کی خدمت نہیں کی جتنی حکومت پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کی ہے۔ مسلم لیگ (ن) نے دیہا ت میں ’’پکیاں سڑکاں اوکھے پینڈے‘‘کے نام سے سڑکوں کا جال بچھا دیا ہے۔ ٹوبہ ٹیک سنگھ میں پانچ سالوں میں ساڑھے بارہ ارب روپے سے سڑکیں، جمنیزیم، گوجرہ میں ہاکی سٹیڈیم میں ٹرف بچھائی، ٹوبہ ٹیک سنگھ میں ای لائبریری بنائی گئی، کمالیہ میں چالیس کروڑ روپے سے واٹرسپلائی، ٹوبہ، پیر محل، گوجرہ میں 90 کروڑر وپے سے واٹرسپلائی، پنجاب اینڈونمنٹ فنڈز کے ذریعے مستحق طلباء و طالبات کو تعلیم کی مفت سہولیات فراہم کی گئیں، اینڈونمنٹ کے تحت تعلیم حاصل کرنے والے ہزاروں بچےّ ڈاکٹرز، انجینئرز اور دیگر پروفیشنلز بن کر پاکستان کی خدمت کررہے ہیں، بہت سے طلباء باہر کے ممالک میں تعلیم حاصل کررہے ہیں۔۔ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرہسپتال ٹوبہ ٹیک سنگھ 45  کروڑ روپے سے دوبارہ تعمیر ہو رہا ہے۔ اعلیٰ معیار کی ادویات کی فراہمی مفت کی جارہی ہے، انفارمیشن ٹیکنالوجی سے ہسپتال کے معیار کو بلند کیا جارہا ہے۔ کھاد کی قیمتیں پچاس فیصدکم کیں، ٹیوب ویل کے بلوں میں کسانوں کو اربوں روپے سبسڈی دی گئی۔ پنجاب حکومت نے ستر سالہ تاریخ میں پہلی مرتبہ بغیر سود کے کسانوں کو اربوں روپے کے قرضے دئیے، ان پانچ سالوں میں خدمت کے تمام ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔ آج ہمارے کاموں کی وہ لوگ مخالفت کررہے ہیں جنہوں نے اپنے صوبوں میں عوام کے ساتھ ہاتھ بھی نہیں ملانا پسند کیا۔ مخالفین نے اپنے صوبوں میں عوام کے لیے کچھ نہیں کیا ہے۔ آئندہ موقع ملا فیصل آبا دمیں بھی میٹرو لے کر آئیں گے۔ ٹوبہ ٹیک سنگھ کو فیصل آباد بنا دیں گے۔ تحریک انصاف کے لیڈرعمران نیازی نے 2014  میں 7مہینے دھرنا دے کر نوازشریف کے خلاف سازش نہیں کی بلکہ پاکستان کے بائیس کروڑ عوام کیخلاف سازش کی۔ 2014  میں چینی صدر کے دورے کو ملتوی کروایا گیا۔ جس کی وجہ سے پاکستان کی ترقی کے سفر کو روکنے کی ناپاک سازش کی گئی۔ تالا بندیوں، اداروں کو یرغمال بنانے، پارلیمان پر حملہ کرنے، نازیبا الفاظ اور جھوٹے الزامات کی سیاست کرنے والوں کو عوام کی طاقت کے ساتھ ہمیشہ کیلئے دفن کردیں گے۔ جھوٹے الزامات کی ناپاک ترین سازش کا خاتمہ کرنا ہوگا، ایم این اے چوہدری اسدا لرحمن، ایم این چوہدری خالد وڑائچ، ایم پی اے پیر علی بابا اور ضلعی چیئر مین فوزیہ خالد وڑائچ نے جب بھی مجھ سے ملاقات کی ہے تو ہمیشہ عوامی مفادات کی بات ہی کرتے ہیں، کبھی ذاتی مفادات کو ترجیح نہیں دی۔ ہمیشہ ترقیاتی منصوبہ جات ہی مانگتے رہتے ہیں کبھی زندگی میں مجھے ذاتی کام کے لیے انہیں نے نہیں کہا ہے۔ یہ لوگ جب بھی میرے پاس آئے ہیں تو آپ لوگوں کے کاموں کیلئے ہی آتے ہیں۔ پاکستان کو غربت سے نکلانے اور قائد اور اقبال کا پاکستان بنانے کیلئے مسلم لیگ (ن) کا ساتھ دیں۔ ایم این اے چوہدری اسد الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ میاں نوازشریف وہ شیردل لیڈر اور مرد مومن ہے جس نے تمام دھمکیوں کی پروا کیے بغیر ایٹمی دھماکے کیے اور پاکستان کو ایٹمی طاقت بنایا۔ لیکن ایک سازش کے بعد دونوں بھائیوں کو جیلوں میں ڈال دیا گیا۔ 2001 میں ورلڈ ٹریڈ سنٹر پر حملہ کے بعد نام نہاد کمانڈو پرویز مشرف نے امریکہ کے ایک ڈپٹی سیکرٹری کے ایک فون پر پاکستان کے تمام اڈے امریکی فوجوں کے حوالے کر دیا۔ وہاں سے بیٹھ کر امریکہ نے افغانستان پر حملے کیے جس کے نتیجے میں وہ ہمارے دشمن بن گئے۔ ایک بزدل آمر کے غلط فیصلے کی وجہ سے ملک میں دہشت گردی بد امنی زور پکڑ گئی۔ 2013 میں دوبارہ مسلم لیگ (ن) نے دہشت گردی پر قابو پایا، بجلی کے مسئلے پر قابو پایا، سوئی گیس کے مسئلے کو حل کیا۔ ساری دنیا کہتی تھی کہ 2013 میں پاکستان ٹو ٹ جائیگا۔ آج پانچ سال بعد دنیا کہتی ہے کہ پاکستان ترقی کی جانب گامزن ہے۔ ملک میں سڑکیں بن رہی ہیں، گوادر کی بندر گاہ بن چکی ہے۔ سوئی گیس، بجلی سمیت دہشت گردی کے تمام مسائل حل ہو چکے ہیں۔ ضلع ٹوبہ ٹیک سنگھ واحد ضلع ہے جہاں سے دو موٹر وے گزر رہے ہیں۔ کمالیہ کے ہر گلی محلہ اور ہر گاؤں میں ان پانچ سالوں میں ترقیاتی کام ہوئے ہیں۔ 42  کروڑ سے کمالیہ میں 32 کروڑ روپے سے پیر محل میں واٹرسپلائی سکیم تیار ہو چکی ہے۔ 60 کروڑ روپے کی گرانٹ سے کمالیہ میں سیوریج کی سکیم تیار ہے۔ چھ مہینے میں میرے حلقہ کے پچاس دیہات میں سوئی گیس آجائے گی۔ بچھے ستر سال میں پنجاب میں اتنے ترقیاتی کام نہیں ہوئے، جتنے ان پانچ سالوں میں پنجاب میں میاں شہبازشریف نے کروادئیے ہیں۔ میں میدان سے بھاگنے والا نہیں ہوں، پاکستان کی خاطر میدان میں کھڑا ہوں اور کھڑا رہوں گا۔

(Visited 16 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *