۔’’کھٹے میٹھے کالم‘‘ اور ’’حرف در حرف‘‘ کی تقریب رونمائی ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہدؔ ۔ دوحہ قطر

پاکستان ایسوسی ایشن، قطر میں مقیم پاکستانی تارکین وطن کے لئے ایک ایسی کثیر جہتی تنظیم ہے جو پاکستانی کمیونٹی کی اخلاقی ،ادبی، ثقافتی اور فکری و نظریاتی فلاح و بہبود کے لئے شب و روز مصروفِ عمل ہے۔ماہانہ شعری و ادبی نشست کا اہتمام،معلوماتی لیکچر زکا انعقاد،نوجوانوں کی کیرئیر کونسلنگ، بچوں کی فزیکل ٹریننگ کے لئے کراٹے کلاسز ،تشنگانِ ادب کی راہنمائی و حوصلہ افزائی اور نئے لکھاریوں کی کتب کی اشاعت،یہ وہ تمام ایسے کام ہیں جو بلاشبہ وقت کی اہم ضرورت اور تقاضا ہیں۔اس سلسلہ میں پاکستان ایسوسی ایشن کو منفرد مقام حاصل ہے۔گذشتہ روز پاکستان ایسوسی ایشن کے زیر انتظام و انصرام راقم الحروف کی اولین کتاب ’’کھٹے میٹھے کالم‘‘ اور قطر کے کہنہ مشق شاعر،ادیب اور مصنف سید فہیم الدین ہاشمی کی بارہویں کتاب’’حرف در حرف‘‘ کی تقریب رونمائی کا اہتمام کیا گیا۔تقریب کے انصرام میں دوحہ میں طلبا کی قطر سے باہر تعلیمی راہنمائی کی تنظیمWWICS کا تعاون بھی شامل حال رہا۔
تقریب کی صدارت کے فرائض کموڈور عرفان تاج دفاعی اتاشی سفارت خانہ پاکستان نے ادا کئے، مہمان خصوصی کی شہ نشین پر رانا انور علی چیئرمین سوہنی دھرتی الخور کمیونٹی اور شاہد رفیق نازؔ وائس چیئرمین پاکستان ایسوسی ایشن جلوہ افروز ہوئے۔پروگرام کی کمپئیرنگ کی ذمہ داری ادا کرتے ہوئے سید فہیم الدین نے معزز مہمانوں کوان کے مختصر تعارف کے ساتھ اسٹیج پر مدعو کیا۔تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا جس کی سعادت سید فیضان ہاشمی نے حاصل کی۔بعد ازاں تلاوت، کتب’’کھٹے میٹھے کالم‘‘ اور حرف در حرف‘‘ کی رونمائی بدست کموڈور عرفان تاج دفاعی اتاشی فرمائی گئی۔رونمائی کتب کے فورا بعد ریحان خان اور حافظ طاہر سلیم قصوری نے راقم الحروف کی کتاب،فن اور شخصیت کے حوالہ سے مقالہ جات پیش کرتے ہوئے کہا کہ مراد علی شاہد ؔ کی کتاب پر مصنف اور تنظیم دونوں داد و تحسین کے مستحق ہیں، مصنف اپنے ادبی اوصاف و محاسن کی بنا پر جبکہ تنظیم اپنے ادبی فرائض کی ادائیگی کی بنیاد پر،مزید انہوں نے کہا کہ مراد علی شاہدؔ کی کتاب طنز و مزاح پر مشتمل ایسے کالمز کا مجموعہ ہے جو کہ مختلف اوقات میں پاکستان کے مختلف اشاعتی اخبارات اور دیگر ممالک سے جاری کردہ آن لائن اخبارات میں شائع ہوتے رہے ہیں۔
سید فہیم الدین ہاشمی کے فن و شخصیت پر شاہد رفیق نازؔ نے اپنے مقالہ میں کہا کہ سید فہیم الدین مبارکباد کے مستحق ہیں کہ ان کے ادبی بچوں کی درجن پوری ہوئی یعنی حرف در حرف انکی بارہویں کتاب ہے،جو ان کے ادبی قد کی پیمائش کے لئے کافی ہے۔فہیم الدین ایک کہنہ مشق شاعر،ادیب ،مصنف اور gems and stone کے ماہر اور بزنس مین ہیں۔انہیں انسانوں اور جانوروں دونوں سے حد درجہ پیار و انسیت ہے،جس کی ایک مثال ہفتہ وار cat feeding programme ہے جس کا خرچہ شاہ جی اپنی پاکٹ سے ادا کرتے ہیں۔مقالہ کے بعد حاضرین میں موجود ڈاکٹر علی ملک کے بارے میں پتہ چلا کہ وہ امریکہ سے حال ہی میں دوحہ منتقل ہوئے ہیں اور ایک اچھے شاعر بھی ہیں تو سید فہیم الدین کی فرمائش پر انہوں نے اپنے کلام سے حاضرین کو محظوظ کیا۔
مہمان خصوصی رانا انور علی نے اپنے خیالات کا اظہار نستعلیق اور مسجع و مقفیٰ اردو میں پیش کرتے ہوئے ’’کھٹے میٹھے کالم‘‘ اور حرف در حرف‘‘ کی ادبی حیثیت متعین کرتے ہوئے فرمایا کہ بلاشبہ دونوں کتب ادبی دنیا میں خوبصورت اضافہ ہیں۔جو قارئین کے دل و دماغ پر تادیر حکومت کریں گی۔سید فہیم الدین نے اپنے حلقہ ارادت میں مراد علی شاہد ؔ کو ہی نہیں بلکہ مجھے بھی اپنا گرویدہ بنا کر اپنے حلقہ مریدی میں شمولیت اختیار کرنے پر مجبور کر دیا ہے ،یہ ان کی خاص محبت کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ آج ان کی دعوت پر ایک دوسرے شہر سے تقریب میں موجود آپ لوگوں کے سامنے موجود ہوں۔
تقریب کے اختتام پر صدارتی کلمات ادا کرتے ہوئے کمو ڈور عرفان تاج دفاعی اتاشی سفارت خانہ پاکستان نے اپنے خیالات کا اظہار فرماتے ہوئے کہا کہ ایسی محافل کا انعقاد پاکستان ایسوسی ایشن کا خاصہ ہے اور مجھے ان کی دعوت قبول کرتے ہوئے ،ان کی تقریبات میں شمولیت اختیار کر کے دلی مسرت ہوتی ہے۔تنظیم روائتی مشاعروں سے ہٹ کر ہمیشہ نوجوانوں کے بہتر اور محفوظ مستقبل کی فکر میں لگی رہتی ہے،آج بھی میں حال میں موجود بچوں کے جوش و جذبہ کو دیکھ رہا ہوں جو تنظیم کی کامیابی کی ایک دلیل ہے،سید فہیم الدین کی تمام کتب میرے مطالعہ میں رہی ہیں مگر مراد علی شاہد ؔ کی کتاب پڑھنے کا مجھے موقع ملاتو مجھے بہت خوشی ہوئی کہ ان کی تحریروں میں حب الوطنی کی جھلک دکھائی دیتی ہے،ان کی تحریروں کی ایک خاص خوبی یہ بھی ہے کہ گھمبیر مسائل کو ایسے ہلکے پھلکے طنزیہ انداز میں بیان کرتے ہیں کہ قاری زیر لب مسکرائے بنا نہیں رہ سکتا۔میں ان کی پہلی تصنیف پر مبارکباد پیش کرتا ہوں اور دعا گو ہوں کہ اللہ ان کے علم اور عمل میں اضافہ فرمائے(آمین)۔

(Visited 10 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *