لاکھوں سلام ۔۔۔ کلام : محمد صدیق پرہار

صاحب حسن وجمال پہ لاکھوں سلام
حبیب رب ذوالجلال پہ لاکھوں سلام
شامل ہے جواسم گرامی میں
محمدکی دال پہ لاکھوں سلام
تشریف لائے جس میں پیارے نبیﷺ
اس ماہ وسال پہ لاکھوں سلام
خرچ ہوجائے میلادرسول میں
ایسے بہترین مال پہ لاکھوں سلام
جس کے آنے سے قبلہ تبدیل ہوا
محبوب کے خیال پہ لاکھوں سلام
پتھرکھاکربھی دعائیں دیں
درگزراستقلال پہ لاکھوں سلام
جسے دیکھ کردشمن ہوئے لاجواب
ایسے معجزے باکمال پہ لاکھوں سلام
بخشش امت کی جس میں بات ہوئی
شب معراج سوال پہ لاکھوں سلام
آگ بھی نہ جلاسکی جنہیں
اس روٹی رومال پہ لاکھوں سلام
جس سے متانت دکھائی دیتی رہی
خراماں خراماں چال پہ لاکھوں سلام
خوشبوسے جن کی گلیاں مہکیں
زلفوں کے ہربال پہ لاکھوں سلام

چوماجس جس نے نعلین کو
ہراس جبال پہ لاکھوں سلام
دیکھنے سے جسے غم بھول گئے
ایسے خوش خصال پہ لاکھوں سلام
اداکرتے رہے رسول کریم جنہیں
ان افعال واعمال پہ لاکھوں سلام
نکل کرزباں سے جوحدیث بنے
ایسے پیارے اقوال پہ لاکھوں سلام
ملی ہے سب سے بڑھ کر
سرکارکی اجلال پہ لاکھوں سلام
انتہائی ظلم میں ثابت قدم رہا
اس موئذن بلال پہ لاکھوں سلام
سنایاجوعرش سے واپسی پر
سفرمعراج احوال پہ لاکھوں سلام
غارحراپربناسفرہجرت میں
اس قدرتی جال پہ لاکھوں سلام
درپہ آنے والے سوالیوں کو
کریں جومالامال پہ لاکھوں سلام
اس کائنات بھرمیں جس کی
نہیں کوئی مثال پہ لاکھوں سلام
مزل، مدثراللہ نے فرمایاجسے
سرکارکی شال پہ لاکھوں سلام
جس خیرات کولے کرمنگتے
ہوگئے نہال پہ لاکھوں سلام

دشمنوں سے جوفرشتوں نے کرایا
محبوب کے استقبال پہ لاکھوں سلام
مصرف ہوجس کامحبت رسول
ایسے بہترین منال پہ لاکھوں سلام
خریدکرعثمان نے تحفہ دیا
علی کی ڈھال پہ لاکھوں سلام
جسے اختیارکرنے کی ترغیب دی
میانہ روی اعتدال پہ لاکھوں سلام
اصحاب رسول پہ صدیق ؔ بھیجتے رہو
نبی کی آل پہ لاکھوں سلام

(Visited 4 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *