مزاح سے متعلق ایک سنجیدہ تحریر ۔۔۔ تحریر: ابنِ ریاض

یہ تحریر کسی استاد کا سبق نہیں ہے بلکہ کچھ نکات ہیں جو اس خاکسار نے مزاح لکھتے ہوئے محسوس کیے۔ مزاح نگار اور ایک بھانڈ مین فرق ہوتا ہے۔ سلور سکرین ٹی وی اور عوام الناس میں جو مزاح

عورتوں کے عالمی دن پر عورت کی توہین ۔۔۔ تحریر : مسز جمشید خاکوانی

بابا جی کھیت میں بھینس کو ہل میں جوت کر ہل چلا تھے اور بیل صاحب چھپر کے نیچے آرام فرما رہے تھے ایک سیانے کا ادھر سے گزر ہوا تو پوچھا یہ کیا الٹی گنگا بہہ رہی ہے بھینس

لیجیے ایک اور بریکنگ نیوز ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

آج کل جس طرح کے حالات چل رہے ہیں ایسے میں تو یہی لگتا ہے کہ مسکرانا منع ہے جس طرف دیکھو بری خبریں ہی سنائی دیتی ہیں ایسے میں بندے کی گبھڑاہٹ ہی نہیں جاتی اس زمر میں میڈیا

غیرمعیاری کسٹوڈین شپ ۔ ہم سانپ تو نہیں ہیں ۔۔۔ تحریر : سید سردار احمد پیرزادہ

انسانی ہسٹری کے مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ جب سے مرد اور عورت کے درمیان شادی کا رواج پڑا اُسی وقت سے دونوں کے درمیان علیحدگی یا طلاق سے پیدا ہونے والے مسائل بھی شروع ہوئے۔ یہ الگ بات

میرے دل کے ہر اِک تار پر ۔۔۔ ترا نام تھا جولکھا ہوا ۔۔۔ تحریر : شاعرہ ثناء خان تنولی

میرے دل کے ہر اک تار پر ترا نام تھا جو لکھا ہوا۔۔۔ غمِ دل کی حسرتوں نےخار میں اُسے رَگڑ رَگڑ کر مٹا دیا۔۔۔!۔ میری زُباں جو تیری مثال تھی۔۔۔ تیرے ہر اک سوال کا جواب تھی موئے دل

حضرت سیدنا لوط علیہ السلام ۔۔۔ تحریر : حافظ کریم اللہ چشتی پائی خیل

حضرت سیدنالوط علیہ السلام حضرت سیدناابراہیم علیہ السلام کے بھتیجے ہیں۔جب آپ علیہ السلام کے چچاحضرت سیدناابراہیم علیہ السلام نے شام کی طرف ہجرت کی توحضرت سیدناابراہیم علیہ السلام نے سرزمین فلسطین میں قیام فرمایااورحضرت لوط علیہ السلام اُردن میں

گجرات ضلعی انتظامیہ مکمل طور پر ناکام تمام اداروں میں مسائل کے ڈھیر عوام ذلیل وخوار۔گجرات میں ہسپتالوں ،تھانے ،چوکیوں اور مقدس تعلیمی شعبہ جیسے اداروں میں بھی عوام ذلیل وخوار ہوگئی ۔وزیر اعلیٰ پنجاب اور کمشنر گوجرانوالہ سے فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ

گجرات (رپورٹ سلیمان بٹ سے) تفصیلات کے مطابق گجرات میں ہسپتالوں ،تھانے ، چوکیوں اور مقدس تعلیمی شعبہ جیسے اداروں میں بھی عوام ذلیل وخوار ہوگئی ۔ضلعی انتظامیہ صرف اخبارات کی زینت تک کھلی کچہریوں کے انعقاد پر کاغذی کاروائی

امن پرستی اور وطن پرستی ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

پلوامہ اٹیک کے کئی دنوں تک بھارت جنگ کی دھمکیاں دیتا رہا مگر کسی نے اسے سنجیدگی سے نہیں لیا یہاں تک کہ بدھ کے دن بھارت کے طیارے لائن آف کنٹرول کو کراس نہیں کر لیتے ہیں ،جس کے

پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسیوں نے خطے کو تباہی سے بچایا ۔۔۔ تحریر : سید سردار احمد پیرزادہ

یہ 1987ء کا سال تھا جب بھارت اور پاکستان کی سرحدوں پر سخت کشیدگی تھی۔ عین اُسی وقت پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسیوں کو سگنل موصول ہوئے کہ بھارت پاکستان پر ایک بڑا حملہ کرنے والا ہے۔ اِن اطلاعات کے

عورت ۔ کہانی ۔۔۔ تحریر : تابندہ جبیں

میں کیا ہوں مجھ سے زیادہ اس بات سے لوگ روشناس کرارتے ہے مجھے۔۔۔کبھی کبھی مجھے وہ دن یاد آتے ہے جو یادیں ناضی بن گئے ہیں ۔۔۔بچھڑے ہوئے دن اس وقت اور زیادہ تکلیف دہ ہوجاتے ہے جب آپ

THE PRESIDENT HUMAN RIGHTS MOVEMENT (UK) ON A TRIP FROM BRISTOL FOR HUMAN RIGHTS CONFERENCE IN UNITED NATION.

The President International Human Rights Movement Rana Basharat Ali Khan is on his way to Geneva from Bristol to participate in the 40 Human Rights Conference at United Nation. Before heads to the airport, he told reporters that he has

اب اور کیا کریں ۔۔۔ تحریر : مسز جمشید خاکوانی

ہم طنزیہ فقرے نہیں لکھیں گے ہمیں غرور بھی نہیں کرنا تین ملکوں نے 35جہازوں کی مدد سے حملہ کرتے وقت سوچا بھی نہ ہو گا کہ اندر بیٹھے دشمن کی مدد حاصل کر کے بھی ہم یوں ناکام ،زلیل

اسلام میں عورت کا مقام اور بین الاقوامی یومِ خواتین ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

ہرسال 8 مارچ کو پوری دنیا میں عورتوں کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔جس کا مقصد خواتین کے حقوق،معاشرے میں ان کی عزت و مقام ،سماجی حیثیت کو تسلیم کرنا ہے۔ساتھ ہی ساتھ انہیں ان تمام حقوق کا شعور فراہم

مُجھے اِک تماشا بنا دیا ۔۔۔ تحریر : شاعرہ ثناء خان تنولی

میرے دل کے ہر اک تار پر ترا نام تھا جو لکھا ہوا ۔۔۔ غمِ دل کی حسرتوں نےخار میں اُسے رَگڑ رَگڑ کر مٹا دیا ۔۔۔ ! ۔ میری زُباں جو تیری مثال تھی۔۔۔ تیرے ہر اک سوال کا

Pakistan is here to stay. Long live Pakistan!

Syed Kazam All Adv. General Secretary Human Rights wing. Insaf Lawyers Forum (Punjab) When a country is going through a critical phase, when the threat of war is looming and when there is unusually high uncertainty in the air, it

سوبرس پرانی کہانی ’’وار‘‘ اور آج کے نریندر مودی ۔۔۔ تحریر : سید سردار احمد پیرزادہ

بیسویں صدی کے نوبل انعام یافتہ اطالوی رائٹر ’’لیوجی پیراندلو‘‘ کا ایک افسانہ ’’وار‘‘ ہے۔ اس شہرۂ آفاق کہانی کا اردو ترجمہ انٹرنیشنل سطح پر پہچانے جانے والے اردو کے پاکستانی مترجم نیر عباس زیدی نے ’’جنگ‘‘ کے نام سے

Turkey President Is Blessing For Muslim World.

Busharat urges more aid for Turkey’s refugee hosting effort For Saiya’s Refugee , I found the mr Hakan Yavuz ERDOĞAN deputy governor as a angel, who helps himself go to Syria everyday and help going camp to campus In a

غلطی معاف ہے، بیوفائی نہیں ۔ ناولٹ قسط 2 ۔۔۔ تحریر : ثناء خان تنولی

حُوری جو کہ کافی (Confident)  لڑکی تھی، اُن سب کو خود پر ہنستا دیکھ رونے والی شکل بنا لیتی ہے۔ وہ لڑکا جس کے پاس اُسے بھیجا گیا تھا( مسٹر ہینڈسم) وہ کوئی سٹوڈنٹ نہیں بلکہ اُنکا نیا سائیکالوجی ٹیچر

تعلیم وتربیت ہو تو ایسی!۔۔۔ تحریر : رضوان اللہ پشاوری

دنیا میں یہی دو چیزیں بہت ضروری ہیں کہ تعلیم بھی بہت زبردست اور اعلیٰ ہو اور اس کے ساتھ ساتھ تربیت بھی اعلیٰ پیمانے پر ہو۔ ان دونوں چیزوں کی زندہ مثال آپ کو دینی مدارس میں ملے گی

میرے گھر کے صحن میں گرنے والی بارش کی ہر اک بوند ۔۔۔ تحریر : شاعرہ ثناء خان تنولی

“نظم” میرے گھر کے صحن میں گرنے والی بارش کی ہر اک بُوند کی دلکشی، مٹی میں مل کر اور بھی نکھرتی جا رہی ہے۔۔۔!۔  اور یہ خُوشبو۔۔۔۔۔۔۔ دُنیا کی سبھی خُوشبوؤں کو پیچھے چھوڑ رہی ھے مٹی کی یہ