میرا جنگل تاریک و سنسان ہے بہت ۔۔۔ شاعرہ ثناء خان تنولی

میرا جنگل تاریک و سُنسان ہے بہت

پنجرا توڑ کر اُڑنے کی جُستجو لئے

پرندے بھی سب ھی افسردہ ہیں..

درختوں کی خشک ٹہنیاں لٹک آئیں،

اور زرد پتے بھی جھڑ رہے ہیں اُنکے

پھول ڈالیوں پر ہی مرجھا گئے تازہ،

سرسبز و ہرا بھرا گھاس سُوکھ گیا

تِتلیوں کے پَر تیز ہوا سے ٹوٹ گئے

اور ویران جنگل جُگنوؤں کی

روشنی کی لہروں سےجگمگا رہا ہے۔!!۔۔۔

(Visited 10 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *