کتابیں پڑھنے کے شوقین ۔۔۔ تحریر : فرح ناز

ہم لوگ جو کتابیں پڑھنے کے شوقین ہوتے ہیں نہ ہم ایک ساتھ بہت سی زندگیاں جیتے ہیں، ہم داستانیں سننے اور پڑھنے والے کبھی عمرجہانگیر کے مرنے پر روتے ہیں، تو کبھی امرحہ کے ساتھ مانچسٹر کی سڑکوں پر سائیکلنگ کرتے ملتے ہیں، تو دوسری طرف عدالت میں کسی کونے والی کرسی پر بیٹھے سعدی یوسف کو انصاف ملنے کی دعائیں کرتے ہیں، تو کبھی ہم سنان کے ساتھ پیرس کی گلیوں میں حیران چلتے چلے جاتے ہیں، کبھی کبھی تو عبداللہ بن کر سلطان بابا کی گہری باتوں کا مفہوم سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں، اور کبھی کبھی وان فاتح اور چہ تالیہ کے ساتھ وقت کے اس پار کا بھی سفر کرتے ہیں۔ اور کبھی اندلس میں اجنی ہوتے ہیں۔۔۔ کبھی پاروشنی کے ساتھ بڑے پانی کے منتظر۔۔۔ کبھی ایمان فروشو ں کی داستان کے شاہد ۔۔۔ اور کبھی انشاء جی کے ساتھ کوچ کے متمنی ھوتے ہیں۔۔
کتابوں کی دنیا مجھے طلسم کدے سے کم نہیں لگتی۔۔ ہم کتابہیں پڑھنے اور لکھنے کے شوقین لوگ کئی کرداروں میں سانس لیتے ہیں۔۔
ساتھ ہنستے ہیں ساتھ روتے ہیں۔۔۔
جب جنت کے پتے میں ڈی جے کی ڈیتھ ہوئی تھی تب میں کتاب بند کر کے بہت دیر تک روتی رہی تھی دکھ کسی طرح کم ہی نہیں ہورہا تھا 😣پھر ہمت کر کے ناول پھر سے شروع کیا تھا ۔۔۔ پھر ناول ” نمل” پڑھتے ہوئے سارے کردار اپنے اپنے سے معلوم ہونے لگے حتیٰ کہ ہاشم کے کردار سے بھی کسی کسی جگہ ہمدردی سی ہو گئی ۔۔ اور سوچنے لگی کہ انسان کو کیا کچھ کرنا پڑتا ہے اپنی فیملی کیلئے ۔۔۔
ھم جیسے لوگ شاید سوادی طور پر عجیب و غریب دنیا میں رہتے ہیں۔۔ کچھ دنوں کیلئے زندگی میں وہ کردار چلتے پھرتے نظر آتے ہیں اور مصنف سے عشق ہو جاتا ہے۔۔۔۔۔
تبھی تو سیانوں نے کہا کہ

بچوں کے ننھے ہاتھوں کو چاند ستارے چھونے دو۔۔۔۔
چار کتابیں پڑھ کر یہ بھی ہم جیسے ہو جائیں گے۔۔۔۔

لیکن پھر بھی میں یہ ضرور کہوں گی کہ کتابیں انسنی زہن ناصرف کو جلا بخشتی ہی بلکہ سوچنے اور سمجھنے کی صلاحیتوں کو بھی وسعت عطا کرتی ہیں۔ اور زندگی میں لفظوں کو کیسے ادا کرنا ھے لہجہ کہاں ترش رکھنا ہے اور کہاں نرم یہ ھمیں اچھی کتابیں ہی سکھاتی ہیں بشرطیکہ ھمارے اپنے اندر سیکھنے کی صلاحیت موجود ھو اور اچھی کتابیں تنہائی کی بہترین غمگسار اور دوست ثابت ھوتی ہیں ۔۔۔ مگر سب اپنے اپنے شوق کی بات ہے ۔۔۔
بس اتنا ہی کہوں گی کہ یہ دائرہ کار بہت وسیع ہے، ہم پڑھنے والے ایک ساتھ کئی زمانو ں کا سفر کرلیتے ہیں ۔۔۔ اور کئی زندگیاں جیتے ہیں ۔۔❤❤❤❤۔۔

(Visited 13 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *