Tag Archives: اسماء طارق

Fate and efforts … Writing by : Asma Tariq

People often ask me how much believe you have in fate and efforts and I  always feel  reluctant to answer the question because  I  can’t deny the importance of efforts by anyways , I believe that most of the things

معاشرے کا عکس ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

ڈرامہ کسی بھی ملک یا علاقے کے رسم و رواج کی جہاں عکاسی کرتا ہے وہی اس علاقے کی سماجی برائیوں کی نشاندہی کر کے ان کا حل بھی دیتا ہے ۔ اس میں بھی کوئی شک نہیں کہ پاکستان

It’s  Okay with Imperfections … Writing by : Asma Tariq

My biggest problem was, I only satisfied with top ,best  and  whenever I fell down, started yelling and blamed others , myself and  nature for all that. I started  work hard to overcome my deficiencies but still there new deficiencies

بے دردی ۔۔۔ تبصرہ : اسماء طارق ۔ گجرات

ڈرامہ کسی بھی ملک یاں علاقے کے رسم و رواج کی جہاں عکاسی کرتا ہے وہی اس علاقے کی سماجی برائیوں کی نشاندہی کر کے ان کا حل بھی دیتا ہے ۔ اس میں بھی کوئی شک نہیں کہ پاکستان

خوف ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

اک خوف سا درختوں پہ طاری تھا رات بھر پتے  لرز  رہے  تھے  ہوا  کے  بغیر  بھی کتنے مضبوط چہروں کے پیچھے کتنے نازک لوگ ہوا کرتے ہیں، پتھر دکھنے والوں کے دل کس قدر معصوم ہوتے ہیں یہ کون

Job of a few thousand salary… Written by Asma Tariq. Gujrat

In Pakistan the graduates are in lac but the job vacancies are in thousands that the reason every year there is more than sixty percent graduates are unemployed. So basically we can say that unemployment is the major issue of

پانی انمول نعمت ہے، قدر کیجئے ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

پچھلے دنوں یوٹوب پر ایک ویڈیو دیکھی جس میں دکھایا گیا تھا کہ کیسے 2050 میں لوگ پانی کو چھپا چھپا کر لاکرز میں رکھیں گے اور چور ڈاکو پیسے اور سونے کو چھوڑ کر پانی کی چوری کریں گے

تبدیلی ملاحظہ فرمائیں ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

تبدیلی کسی نعرہ بازی کا نام نہیں ہے بلکے یہ عمل سے ممکن ہوتی ہے مگر یہاں تو لوگوں پر آج کل تبدیلی کا کچھ ایسا نشہ چڑھا ہو ہے کہ ان سے کچھ بھی بات کریں تو وہ صرف

Moonlight.

 Writing by Asma Tariq. In the darkness of night, I was in my room, sitting at the coach near the window and feeling bad about things, persons and situations. There everything was terrible for me, the darkness, the night ,the

 کوڑا کرکٹ ۔۔۔ تحریر : اسماء طارق ۔ گجرات

شہر شہر بن رہا ہے کوڑا کرکٹ کی آماجگاہ سڑکوں پر جگہ جگہ ہے جس کا راج وہ ہے ؛ کوڑا کرکٹ دو پل پدل چلنا بھی ہے محال ، کیونکہ ہے ہر جگہ ؛کوڑا کرکٹ آدھی سڑک ہے گاڑیوں