Tag Archives: مراد علی شاہدؔ

نون” نومبر،” دال” دسمبر۔ (طنزو مزاح)۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر”

ماہِ نومبر و دسمبر تاریخِ پاکستان میں اس لئے اہمیت کے حامل ہیں کہ دو عبقری شخصیات اقبال اور قائد مذکورہ ماہ میں آمد و رخصت ہوئے۔یعنی نومبر آمدِ اقبال(سالِ پیدائش)،دسمبر رخصتِ قائد(سالِ وفات)۔تاہم میرے لئے دونوں ماہ اس لئے

سرمہ ہے میری آنکھ کا خاکِ مدینہ و نجف ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

علامہ محمد اقبال کے اس مصرع پر اگر غور کیا جائے تو محسوس ہوتا ہے کہ اقبال کے ہاں آنکھوں کے نور کی نورانیت خاکِ بطحا کے نورانی ذروں میں پوشیدہ و مضمر ہے۔اقبال خاک مدینہ کو زینتِ عینین اور

ماہر تعلیم مادام نبیلہ کوکب سے ایک ملاقات ۔۔۔ انٹرویو : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

نیلسن منڈیلا سے تعلیم کی بابت جب سوال کیا گیا تو نیلسن منڈیلا نے اس کی بڑی جامع تعریف یوں بیان کی کہ” تعلیم ایک ایسا اسلحہ (ہتھیار) ہے جس سے آپ دنیا میں انقلاب برپا کر سکتے ہیں” تاریخ

سٹوڈنٹ آف انگلش اینڈ کورس ۔۔۔ (طنز و مزاح) ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

پر معطر بند کمرے میں ایک شخص چاک کو ” چاکِ گریباں” کرتے ہوئے بلیک بورڈ کے پاس کھڑا ناکام”راک اینڈ رول” کی کوشش کر رہا ہو،یا چنداں ماڈرن یونیورسٹیوں میں چند ماڈرن طلبا و طالبات کے جھرمٹ میں سمارٹ

گدھا، خر اور کھوتا ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

اپنے دوستوں،ناصر ناکا گاوا (جاپان) اور مہر راحیل رؤف(فرانس)سے اپنے مضمون کی تیاری کے سلسلے میں رابطہ کر کے پوچھا کہ گدھے کو جاپانی اور فرنچ میں کیا کہتے ہیں تو دونوں احباب کی طرف سے ذو معنی قہقہے کے

اقبال اور قرآن ۔۔۔ تحریر : مُراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

امین اصلاحی فرماتے ہیں کہ میں نے ساری زندگی قرآن فہمی میں گزاری اور خود کو جانا کہ میں نے تفسیر لکھنے کا حق ادا کر دیا ہے۔لیکن قرآن فہمی میں جہاں ہماری پرواز ختم ہوتی ہے وہاں سے علامہ

میکرو،مائیکرواور میٹرو۔۔۔(طنزومزاح)۔۔۔ تحریر: مراد علی شاہد ۔ دوحہ قطر

میکرو او ر مائیکرو الفاظ سے میرا واسطہ دورانِ گریجوایشن اکنامکس پڑھتے ہوئے ہوا کہ میکرو طویل المدتی،لمبے عرصے کے لئے حصولِ فوائد کے پروگرام جبکہ مائیکروعرصہ قلیل میں قلیل المدتی فوائد حاصل کرنے والے پروگرام ہوتے ہیں۔ملکی اور” منشی

گورکن (مائیکرو افسانہ) ۔۔۔ تحریر : مراد علی شاہدؔ ۔ دوحہ قطر

آج میرے شہر کے سب سے بڑے شہر خموشاں (قبرستان) کا گورکن عبدالرحمان مانا ہے۔جو اٹھارہ سالہ بھر پور عمر شباب میں اپنے کام میں ہمیشہ مصروف و مست دکھائی دیتا ہے۔یہ پیشہ اس نے اپنی مرضی سے نہیں چنا