فورس سے زیادہ اچھے اخلاق کی ضروت ہے

کمالیہ ( ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ۔ ایڈیٹر ہماری بات پاکستان ) تھانہ سٹی کمالیہ کے فرنٹ ڈیسک پر تعینات اہلکار اویس کا عوام کے ساتھ ناروا سلوک معمول بن گیا۔ تھانہ میں آنے والے سائلین کے ساتھ بدزبانی اور ہتک آمیز رویہ اپنایاجاتا ہے۔ مذکورہ اہلکار ایک سال سے تھانہ سٹی میں ہی تعینات ہے، اہلیان علاقہ کا آر پی او فیصل آباد اور ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ سے فوری نوٹس لینے اور اویس کو ضلع بدر کرنے کا مطالبہ۔ گذشتہ روز کمالیہ کا شہری کرایہ نامہ کا اندراج کروانے کیلئے تھانہ سٹی پولیس کمالیہ گیا۔ جس کے ساتھ فرنٹ ڈیسک پر تعینات کمپیوٹر آپریٹر اویس نے نہایت ہتک آمیز رویہ اختیار کیا اور اس کے ساتھ بدزبانی بھی کی۔ اس سے قبل بھی اویس نامی ملازم کے بارے میں لوگوں کی شکایات سامنے آچکی ہیں کہ تھانہ سٹی میں آنے والے ہر سائل کے ساتھ بدتمیزی کی جاتی ہے اور اس ناروا سلوک کیا جاتا ہے۔ جس کی وجہ سے لوگوں کے مسائل حل ہونے کی بجاے مزید بڑھ رہے ہیں۔ حکومت کی جانب سے پڑھے لکھے نوجوانوں کو تھانوں میں فرنٹ ڈیسک بنا کر اس لیے تعینات کیا گیا تھا کہ یہ لوگ عوام اور پولیس کے درمیان بڑھتے ہوئے فاصلوں کو کم کریں گے لیکن تھانہ سٹی کمالیہ میں اس کے برعکس ہو رہا ہے ۔ اہلیان کمالیہ نے آرپی او فیصل آباد اور ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے اویس نامی ملازم کو تھانہ سٹی کمالیہ سے تبدیل کرکے ضلع بدر کیا جائے اور اس کی جگہ کسی اچھے اخلاق کے شخص کو تعینات کیا جائے تاکہ فرنٹ ڈیسک کے قیام کے اصل فوائد حاصل ہو سکیں۔ اس حوالے سے فرنٹ ڈیسک کے انچارج رانا شاہد محمود نے بتایا کہ اس معاملہ کا نوٹس لیتے ہوئے اویس کو شوکاز نوٹس جاری کیا گیا ہے۔ جس میں سات دن کے اندر جواب طلب کیا گیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ اس حوالہ سے اعلیٰ افسران کو آگاہ کردیا گیا ہے۔

(Visited 16 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *