بھارتی انتہاء پسندی کا مُنہّ توڑ جواب ۔۔۔ تحریر : ثناء خان تنولی‎

بہت افسوس ہوا ،بہت ہی زیادہ ! ۔
یوٹیوب پر موجودہ کچھ ویڈیوز پاکستانیوں اور بھارت واسیوں کی جانب سے جو اَپ لوڈ کی گئیں ملک کے موجودہ حالات کے بارے میں جس سے آپ سب بھی واقف ھیں۔
تو دوستو! میں کہنا چاہوں گی کہ یہی انسانیت ھے؟ کیا واقعی ہی ہم انسان ھیں؟ جو امن پسندی کا گہوارہ ھیں۔
اگر ھیں تو پھر یہ سب کیا ھے؟ جو کیا جا رہا ھے جو بڑھا چڑھا کر عوام کے آگے پیش کر کے عوام کو پاگل بنایا جا رہا ھے۔۔۔۔ خصوصاً (بھارات واسیوں) سے مخاطب ہوں میں۔
تو مودی صاحب بولے تو کاہے ای سب نوٹنکی کرت ہو؟ ای سب کیلئے تمری راکھی اور منی کم تھیں کا؟ ۔
اررے کاہے اپنی بزتی آپ کرے جاوت ہو کونو عجت ھے بھی کا ناہی؟۔
“اپنا کام بنتا (مودی صاحب) ۔
بھاڑ میں جائے جنتا( بھارت واسیوں) ۔
تو ہمارے پڑوسی ملک انڈیا میں بھی اس وقت کچھ ایسے ہی حالات ھے پلوامہ میں مودی جی نے خود ہی حملہ کرایا اس قدر گرا ہوا تو اپنا نواز شریف بھی نہیں تھا جس قدر نیتا کی کرسی پانے کیلئے یہ بندا پگلا رہا ھے۔
“منی تمری جوان ھے۔
شیلا وی بدنام ھے، ۔
اور ہمرا پی-ایم پٹھان ھے کا سمجھے؟؟ ۔
عزت تو نا بھئی ناں!!! عزت کے معنی بھی نہیں پتا تم جیسے جاھلوں کو! جو کہہ رہے ھو ناں کہ پاکستانی بارڈر پر بھارتی فوجی مُوتا بھی کریں تو پاکستان بہہ جائے۔
ھاھاھاھاھا یہی بات کچھ سال پہلے تم لوگوں کی ڈھمکا چیمپین راکھی ساونت صاحبہ نے بھی بھونکی تھی… بولو کیا اُکھار لیا؟؟ ۔
اور پاکستانی پرچم کو جلانے والو خدا غارت کرے تم جیسے جاھلوں کو ایک پرچم جلا دینے سے اس کے تقدس کو ہمارے دلوں سے مٹا نہیں پاؤ گے۔
اتنی عقل نہیں 100،50 کا بھگوان خرید کر اس کی مالا جبتے ھو جب اوپر جاؤ گے تو وہی مالا تم لوگوں کے گلوں کا پھندا بنے گی ۔’خوفِ خدا سے بیزار یہودیوں!!!۔

اُکھار تو تم لوگ گوئیاں وی نہ سکتے”۔
بس کتوں کی طرح یوٹیوب پر ویڈیوز بھیجو اور بھونکو،،،! ایسے ہی سڑ سڑ کے مرو گے مودی نہ ڈالے گا گائے گا مُوتا تم لوگوں کے منہ میں ۔
اور ایک بات پاکستان کو بھکاریوں کا ملک کہنے سے پہلے ایک نظر اپنے بھارت وسیوں پر… جو بھوکے پیادے اور ننگے مر رہے ھیں ان کی فکر کر لو، حرام کھا کھا کر حرام ہی اُگلو گے ناں یہی توقع کی جا سکتی۔
سدھو بولا تو کپل شو سے نکال دیا اس کے خلاف بھارت بھر میں مظاہرے کئے گئے۔
بھارت کبھی پاکستان سے میچ ھار گیا تو انہیں جان کی دھمکیاں۔۔۔۔
یہ ھے تم لوگوں کی اوقات ۔۔۔۔۔۔جہاں جھکنا اور ذلت پسند نہیں وہیں وہیں دو ٹکے کی عزت نہ رہی تم لوگوں کی۔
ھڈ حرام جو ھو پکا پکایا حلوہ کھا رہے ھو مودی کتا دن کو رات کہتا ھے تو بتی بجھا کر آؤ دیکھتے نہ تاؤ سو جاتے۔
کل کو اپنے آپ سچ سامنے آ جانا کل یہی جنتا مودی کے منہ پر تھوکے گی جو آج اسکی حمایت میں کھڑی ھے ۔کیونکہ یہ تو ایک ریت ھے جو صدیوں سے قائم الیکشن قریب ھیں ہوش کے ناخن لو بھارت واسیوں۔
ایٹمی طاقت ہمارے پاس بھی ھے. حملے میں پہل ہم بھی کر سکتے ھیں مگر پاکستان الحمدلله ایک امن پسند ملک ھے۔ ہر مسئلے کو پیار محبت سے حل کرنے میں یقین رکھتا ھے۔
مگر تم لوگن کو تو سمجھ ہی نا آوت ہمرا پیار ۔۔۔۔ کبھو نفرت نا دیکھی نا اسی لئی بہتے بلبلا رہے ہو ۔
تم لوگ صرف ٹھمکے لگانا جانت ہو جو کہ جنگ میں کام ناہی آوت ھیں۔۔۔۔کچھو نیا ٹرائی کرو کوہے عوام کو بُدھو بناوت پرانی باتن سے…؟
اور ڈیڈ لائن 24 سے 48 گھنٹے بھی گزر گئے کچھ نا اُکھاڑ پائے تم لوگ پاک فوج کے رہتے پاکستان کے اندر داخل بھی نہیں ہو سکتے بات کرتے ہو ۔۔۔
صرف باتیں کرو۔۔۔۔ بے غیرتوں!!! ۔
گائے کو ماتا کہنے والو!! ۔
گائے کا موتا پئیو!!! ۔
پتھروں کو پُوجو!! ۔
آڑھی ٹیڑھی بد شکلے
بھگوانوں کی پوجا کرو۔۔۔
زیادہ دماغ پہ دباؤ مت ڈالو ،ورنہ عقل آ جائے گی اور عقل آ گئی تو بھگوانوں کو توڑ ڈالو گے اور بھگوانوں کو توڑا تو مودی کے کتے تم لوگوں کا خون پی جائیں گے ۔ ڈئیر بھارت وسیو!!!۔
سب سے ان پڑھ اور گھٹیا لوگ بھارت میں پائے جاتے جو ابو تک “ضروری” کو جروری لکھتے۔۔۔۔
ماں بہن کی گالیوں سے نیچے تو بات کرنی ہی نہیں جناب! اُن کے گھروں میں کونسی بہنیں ھیں جو انکا تقدس جانیں گے۔۔۔

ایسن نیچ زات لوگن کو کاہے منہ لگانا تُھو !!!!۔

(Visited 22 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *