غلطی معاف ہے، بیوفائی نہیں ۔ ناولٹ قسط 3 ۔۔۔ تحریر : ثناء خان تنولی

آخر کار کافی سوچ بچار کے بعد اُس نے دو سموسے /چٹنی پلیٹ اور ساتھ میں ایک کپ چائے آرڈر کی۔۔۔
وہ چائے اور سموسے لیکر جلدی سے کینٹین کے پچھلی طرف باغیچے میں پڑے ٹیبل پر بیٹھی اور جلدی جلدی سے سموسوں کے ساتھ ساتھ چائے کی بھی بڑی بڑی چسکیاں لینے لگی۔،۔۔۔
ایک دم سے اُسے کسی کے ہنسنے کی آواز آئی اس نے بائیں جانب سَر گھمایا تو یہ وہی ہینڈسم لڑکا(شاہ سلمان)تھا جس سے وہ صُبح صُبح ٹکرائی تھی۔۔۔
اووو”” آپ!!!۔۔۔
حُوری”””۔۔۔ اپنی سموسہ پلیٹ اُٹھا کر اپنی کرسی کا رُخ اُسکی طرف موڑ کر بیٹھ گئی ۔۔۔
حُوری : کیا میں پوچھ سکتی ھوں “مسٹر” آپکو ہنسی کس بات پر آ رہی ھے؟۔۔۔
حُوری۔۔۔ کو ایک بار پھر سے صبح کی طرح لال ہوتا دیکھ اس نے اپنا تعارف کروانا ہی مناسب سمجھا ۔۔۔
اس سے پہلے کہ حُوری مزید کچھ کہتی وہ خود ہی بول پڑا ۔۔۔۔۔۔۔
۔۔۔”Hii!! …..i’m Shah’ Salman your siqology Teacher”۔۔۔

حُوری کے تو جیسے اوسان ہی خطا ہو گئے، ناجانے اُس کے منہ سے اور کیا کیا نکل جاتا،۔۔۔
حُوری: نے ایک لمبا سانس لیا اور سامنے ٹیبل پر پڑا پانی کا گلاس اُٹھا کر ایک ہی سانس میں پی گئی… اُسے سمجھ نہیں آ رہا تھا کہ اپنے رویے کیلئے excuse کیسے کرے ۔۔۔
حُوری”””۔۔۔سر!!! ۔۔۔
۔۔۔”I am Really Sorry”۔۔۔
حُوری بمشکل اتنا ہی کہہ پائی تھی کہ شاہ سلمان نے اُسے ایک بار پھر سے ٹوک دیا۔۔۔
۔۔(شاہ سلمان):: وہ کس لیے؟۔۔۔۔۔۔
۔۔(حُوری): سر! مجھے پتا نہیں تھا کہ آپ ٹیچر ھیں مجھے لگا کہ۔۔
بس اتنا ہی کہہ کر حوری نے اپنی دونوں آنکھیں میچ لیں، ۔۔۔
۔۔

۔(شاہ سلمان): کوئی بات نہیں ہو جاتا ھے کبھی کبھی، Actually،

غلطی آپ کی تھوڑی تھی آپ بھی تو آج ہی آئیں ھیں ناں۔۔۔ انہیں سوچنا چاہئے تھا کہ لڑکیوں کیساتھ کس طرح سے پیش آنا چاہئے، اور دوسری بات مذاق مستی کی بھی ایک حد ہوتی،وہ مذاق واقعی ہی اچھا نہیں تھا!
آپ کو سوری محسوس کرنے کی کوئی ضرورت نہیں وہ اس لئے کیونکہ،

I know miss?? Unknown
وہ اپنے الفاظ پر ہلکا سا مسکرایا۔۔۔
آپ نہیں جانتیں تھیں مجھے، اسی لیے یہ سب شاید..! وہ پھر سے حوری کو دیکھ کر مسکرایا، کیونکہ اس کے چہرے کے تاثرات بتا رہے تھے کہ وہ اس وقت کتنی کنفیوز ھے،
شاہ سلمان): چلیں اب آپ جلدی سے سموسے کھائیں ورنہ ٹھنڈے ہو جائیں گے۔۔۔ ھاھاھا( قہقہ لگاتے ہوئے)۔۔۔
حُوری””۔۔۔ بھی اُوپر دیکھ کر ہلکا سا مسکرا دی!! ۔۔۔
۔۔۔(شاہ سلمان): ویسے محترمہ!! ۔۔۔
“آپ کا نام کیا ھے”؟ ۔۔۔
Miss Unknown? یا پھر کچھ اور؟

حُوری”””۔۔۔چائے کا کپ، اُٹھاتے ہوئے اُس کی طرف دیکھ کر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ “حور العین” (حُوری)۔۔۔
کہہ کر دوبارہ چائے کا کپ مُنہ سے لگا لیا۔۔۔
۔۔۔(شاہ سلمان): اووو ..!!! Nice Name، “حُوری”۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
حوری: “جی! شکریہ”۔۔۔

(Visited 36 times, 1 visits today)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *